•  آداب، میرانام سٹاک سمتھ ہے اور میں چیری کریک اسکول ڈسٹرکٹ میں بطور چیف فائنا نشل اینڈ آپریٹنگ آفیسر اپنی خدمات انجام دے رہا ہوں۔ ہمیں جن مالی مسائل کا سامنا ہے میں ان کے بارے میں چندمنٹ بات کرنا چاہتا ہوں۔اس کے علاوہ میں یہ بھی بتاؤں گا کہ بجٹ میں درپیش چیلینجز کو ہم جس طرح حل کریں گے اس سلسلے میں ہمیں کمیونٹی سے معاونت اور مشورے کیوں درکارہیں۔

    COVID-19 سے قبل، تعلیمی سال 2019-20 کے دوران، سپرنٹینڈنٹ ٹ سیگفرایڈ نے چیری کریک کی مالیات پر ایک نظر ڈالنے اور آگے بڑھنے کے لیے بجٹ کو متوازن کرنے کے لیے ایک ٹاسک فورس بنائی تھی۔ 2019 میں تشکیل دی گئی بجٹ ٹاسک فورس نے آگے بڑھنے کے لیے ہمارے بجٹ کو مستحکم کرنے کے لیے کئی سفارشات پیش کی تھیں۔ آئندہ تعلیمی سال کی جانب بڑھتے ہوئے ہمارے اخراجات کو مستحکم کرنے کے لیے ایک جانب ہم اپنی آمدنی بڑھانے کے طریقہ کار تلاش کررہے تھے اور دوسری جانب یہ بھی دیکھ رہے تھے کہ ڈسٹرکٹ بھر میں ہم اپنے اخراجات میں کس طرح کمی لاسکتے ہیں۔

    اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ COVID-19 سے ہرچیز بدل گئی، اور کولوراڈو ریاست کہ جس پر ہمارے اسکول ڈسٹرکٹ کا انحصار ہے اس کی آمدنی میں 25 فیصد یا $3.2 بلین ڈالرز کی کمی ہو ئی ہے۔ اس سے 2020-21 کے تعلیمی سال میں داخل ہوتے ہوئےہمارے موجودہ تعلیمی سال کی فنڈنگ میں بھی 5.5 فیصد یا $25 ملین ڈالرز کی کمی واقع ہوئی ہے۔

    گزشتہ چند برسوں کے دوران اگر ہم اپنی فنڈنگ پر نظر ڈالیں تو یہ بات کسی سے بھی چھپی ہوئی نہیں ہے کہ کولوراڈو ریاست نے K-12 کی فنڈنگ میں بتدریج کمی کی ہے۔ آپ دیکھ سکتے ہیں کہ ہم نے 2020-21 کے تعلیمی سال میں داخل ہوتے ہوئے جس آمدنی کی کا تخمینہ لگایا تھا درحقیقت ہمیں جو وصول ہوا ہے وہ 2018-19 کے تعلیمی سال سے بھی کم ہے۔ آگے بڑھتے ہوئے اس سے ہمیں کئی چیلنجز کا سامنا کرنا پڑے گا اور جیسا کہ ڈاکٹر سیگفرائیڈ نے عملے اور کمیونٹی کو لکھے گئے اپنے خط میں اس کا ایک خاکہ بھی پیش کیا ہے۔

    تو ہم یہاں تک کیسے پہنچے؟ COVID سےپہلے، ہم اپنے آپریٹنگ بجٹ میں $12 ملین ڈالرز کے اضافے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔ کولوراڈو میں ہمارے اسکول ڈسٹرکٹس کے سائز کے لحاظ سے یہ ایک معیاری قسم کا اضافہ ہے۔ لیکن حقیقت میں، جیساکہ میں نے پہلے بھی ذکر کرچکا ہوں، ہمارے $25 ملین ڈالرز کاٹے جائیں گے۔ تو، اس طرح محض چند مہینوں کے دوران ہماری فنڈنگ میں یہ $37 ملین ڈالرز کی تبدیلی ہے۔ اس کے علاوہ ہمیں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہم آئندہ برس میں اضافی کٹوتیوں کی بھی منصوبہ بندی کریں، رواں برس ہم جو کٹوتیاں کر رہے ہیں وہ 5.5 فیصد سے بھی زیادہ کی ہوں گی۔ اس وقت ہمارا تخمینہ ہے کہ اب سے ہر سال اضافی 7 فیصد کٹوتی کرنی ہوگی۔ اس سے ہماری اسکول ڈسٹرکٹ میں مزید $33 ملین ڈالرز کی کمی ہوجائے گی۔ لہٰذا، جب آپ دونوں کٹوتیوں کو آپس میں ملاتے ہیں تو ہمیں فنڈنگ میں تقریباً $58 ملین ڈالرز کی کمی ہوگی اور آئندہ تعلیمی سال میں داخل ہوتے ہوئے ہمیں اس کو مل کر حل کرنا ہے۔

    ہم سے اکثر جو سوالات پوچھے جاتے ہیں ان میں یہ بھی پوچھا جاتا ہے کہ، ‘انتظامیہ میں سے پہلے سے کتنی کٹوتی کی جاچکی ہے؟ 'یا، 'مرکز دفتر میں سے کیا کٹوتی کی گئی ہے؟' آپ اس سلائیڈ میں دیکھ سکتے ہیں ہم نے رواں برس میں داخل ہوتے ہوئے اپنے مرکزی شعبوں میں 15 فیصد کی کٹوتی پہلے سے ہی کرلی ہے، جس سے ہمیں $2.4 ملین ڈالرز کی بچت ہوئی ہے۔ اس کے علاوہ، ہمارے اخراجات کو مستحکم کرنے کے سلسلے میں بجٹ ٹاسک فورس کی جانب سے دی گئی سفارشات میں سے ایک یہ بھی تھی کہ پیسے بچانے کے لیے مرکزی دفتر میں موجود خالی آسامیوں پر بھرتیوں کا عمل روک دیا جائے۔ بجٹ ٹاسک فورس نے سفارش کی تھی کہ اس حکمتِ عملی سے ہمیں $2.6 ملین ڈالرز کی بچت ہوگی۔ مجھے یہ بتاتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ ان خالی آسامیوں پر بھرتیاں نہ کرتے ہوئے ہمارے اسکول ڈسٹرکٹ نے پہلے سے ہی $3.2 ملین ڈالرز کی بچت کرلی ہے۔ اس میں ہمارے مرکزی دفتر اور ہماری انتظامیہ میں 35 آسامیوں کی کٹوتی بھی شامل ہے۔ رواں برس تعلیمی سال میں داخل ہوتے ہوئے ہم نے پہلے سے ہی 10 منتظمین یا ہماری مجموعی انتظامی افرادی قوت کی پانچ فیصد کی کٹوتی کردی ہے۔ میں یہاں پر یہ بھی واضح کرنا چاہتاہوں کہ اگر ہم انتظامیہ پر نظر ڈالیں تو، فرنٹ رینج میں چیری کریک کے مرکزی دفتر میں سب سے کم عملہ ہے۔ کولوراڈو اسکول فائنانس پروجیکٹ کی جانب سے ایک آزادانہ مطالعے میں بتایا گیا تھاکہ ہماری طرح کی دیگرڈسٹرکٹس کے مقابلے میں ہمارے پاس سب سے کم منتظمین اور مرکزی دفتر کا عملہ ہے، اور یہ کہ عمومی انتظامیہ میں مجموعی بجٹ کے1 فیصد سے بھی کم جہے۔

    ہم اس بات کی یقین دہانی کرنا چاہتے ہیں کہ ہماری مالی حکمتِ عملی ایک طویل مدتی مالی حکمتِ عملی ثابت ہواور یہ کہ آئندہ کئی برسوں اور دہائیوں تک شاندار کارکردگی کے لیے ہم خود کو تیار کرلیں۔  اور یہی سبب ہے کہ ہم اس کو ایک طویل مدتی تناظر میں دیکھ رہے ہیں: آنے والے برسوں کے دوران ہم اپنے بجٹ کے اس سٹرکچرل مسئلہ کو کس طرح اور اپنی کمیونٹی کو اپنے ساتھ ملا کر حل کریں؟ یہی سبب ہے کہ اس سروے میں ہمیں آپ کی معاونت اور مشاورت درکار ہے، تاکہ ہم اپنے بجٹ میں کٹوتیاں کرسکیں، ہمارے لیے ضروری ہے کہ ہم اس کو ایسی مالیاتی دانش مندی سے حل کریں جس سے طویل مدتی کامیابی حاصل ہو۔

    ہم آپ کے مشکور ہے کہ آج آپ نے اپنا وقت نکال کرہمیں اپنے مفید آرا سے نوازا اور رواں گرمیوں کے دوران آگے بڑھتے ہوئے ہم اس سروے کے نتائج سے رہنمائی حاص